Tuesday, October 16, 2012

Mqm vs jui f new

mqm
کراچی … متحدہ قومی موومنٹ کے قائد الطاف حسین کا کہنا ہے کہ ڈرون حملوں کے خلاف ہیں اور ان کی مخالفت کرتے رہیں گے، پاک فوج طالبان کے خلاف کارروائی کرے، ایم کیو ایم ساتھ دے گی۔ کراچی کے جناح گراوٴنڈ عزیز آباد میں متحدہ قومی موومنٹ کے جنرل ورکز اجلاس سے ٹیلی فونک خطاب میں ایم کیوایم کے قائد الطاف حسین نے کہا کہ ملالہ یوسف زئی علم کا اجالا ہے، جس پر حملہ کرنیوالے دہشت گرد انسان نہیں درندے ہیں۔ ملالہ ، شازیہ اور کائنات کی جلد صحت یابی کی دعا کرتے ہوئے الطاف حسین نے سوال کیا کہ اس حملہ کے بعد بعض سیاسی اور مذہبی جماعتیں خاموش کیوں ہیں؟، یہ خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام پاکستان کی بقاء و سلامتی اور قائد اعظم کا پاکستان چاہتے ہیں یا دنیا کے نقشے سے پاکستان کو مٹانا چاہتے ہیں۔ الطاف حسین کا کہنا تھا کہ تمام مشکلات کے باوجود آگے بڑھنا ہوگا، قوموں کو اپنی حالت خود بدلنا ہوتی ہے۔ ایم کیو ایم کے قائد نے کہاکہ جن 50 علماء نے ملالہ پر حملے کے خلاف فتوے دیئے وہ انہیں سلام پیش کرتے ہیں۔ الطاف حسین نے بتایا کہ ایم کیو ایم ڈرون حملوں کے خلاف ہے اور آئندہ بھی مخالفت کرتی رہے گی ۔ الطاف حسین نے مزید کہا کہ ملالہ اور ان کی ساتھیوں پر طالبان دہشت گردوں کے حملے کی شدید مذمت کرتے ہیں، ملالہ قوم کی بیٹی ہے۔انہوں نے کہا کہ ملالہ یوسف زئی نے تعلیم کے فروغ کیلئے آواز بلند کی، طالبان کے زیر اثر علاقوں میں تعلیم کیلئے آواز بلند کرنا بہادری ہے، معصوم بچیوں پر طالبان کا حملہ شرمناک ہے، ملالہ پر حملہ تعلیم پر حملہ ہے۔

jui f
سکھر …جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ ایک دوسرے پرالزامات لگانے سے معیشت درست نہیں ہوسکتی،سیاستدان ایک دوسرے پرکرپشن کے الزامات لگاتے ہیں،آج فاٹا،بلوچستان اورکراچی کی صورتحال دیکھ لیں۔انھوں نے ان خیا لات کا اظہار اتوار کی شب سکھر میں اسلام زندہ باد کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا، جہا ں شرکاء ایک بڑی تعداد انکا خطاب سننے پہنچی تھی،جے یو آئی کے سربراہ نے اس موقع پر اپنے خطاب میں مزید کہا کہ ملک میں امن وامان کی صورتحال خراب ہے،یوں لگتاہے یہ ملک بھتاخوری کیلیے بنایاگیا،مولانا فضل الرحمن نے کہاکہ احتساب بلوں سے ملک کی معیشت بہتر نہیں ہوسکتی،65سال پہلے ایک فلاحی ریاست کیلیے ہم سے قربانیاں لی گئی تھیں، انھوں نے کہا کہ آج بھی غریب جاگیر دار کے شکنجے میں جکڑا ہوا ہے،ہم عالمی قوتوں کے جبر کے نظام کو قبول نہیں کریں گے،جن لوگوں نے آ ج تک حکومت کی،کیاانھوں نے اس قوم کوایک قوم بننے دیا،65سال میں غریب کو خوشحالی نہیں دی گئی، جمعیت علمائے اسلام(ف) کے سربراہ نے کہا کہ کیا آج بھی ہمارا ملک ایک سیکیورٹی اسٹیٹ نہیں ہے، ہمیں کہاجاتاہے کہ علما ملالہ کے واقعے کیمذمت کریں ،پہلے وہ لوگ ہمارے مدرسوں پربمباری کی تو مذمت کریں،ملالہ یوسفزئی ہماری بیٹی ہے،مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ کچھ لوگ ملالہ پرحملے سے اپنی سیاست چمکارہے ہیں،بین الاقوامی صورتحال کا ذکر کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ ایران اورافغانستان سے تعلقات مستحکم کرنیکی حکومت میں صلاحیت نہیں،آج بھی مذہبی طبقے کونشانہ بنایاجارہاہے،موجودہ قیادت اورادارے ناکام ہوچکے ہیں انھوں نے کہا کہ ،ہمارے ادارے اغواہونیوالوں کاپتاتک نہیں بتاسکتے،اب بلوچوں کوضمانت دیناہوگی کہ پاکستان میں تمہارامستقبل محفوظ ہے،اگرلوگ اپنے بچوں کاتحفظ چاہتے ہیں توقیادت بدلناہوگا،لوگوں کولسانیت،صوبائیت اورفرقوں کی بنیادپرلڑایاجارہاہے

No comments:

Post a Comment

قربانی فی سبیل اللہ۔۔۔تحریر: مجدی رشید

عید قربان حقیقی معنوں میں ایسے پسے ہوئے طبقے کے لئے خوشیوں کا پیغام لے کر آتا ہے جنہیں سارا سال گوشت میسر نہیں آتا۔ پیر 5 اگست 2019 qu...